عمران خان حکومت نے بجلی کی قیمت بڑھائی نہیں اور پیٹرول کی کم کی، شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کی حکومت نے جان بوجھ کر بجلی کی قیمت نہیں بڑھائی اور پیٹرول کی قیمت کم کی، جس کی وجہ سے مسائل بڑھے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے 4 سال معاہدوں کو توڑا اور شوکت ترین نے آخری معاہدے کو نہ صرف توڑا بلکہ ملک کو مشکل میں ڈالا۔ پی ٹی آئی نے وہ کیا جو دنیا کے امیر ترین ملک نہیں کر سکتے اور پیٹرول کی قیمت کو کم کیا۔

انہوں نے کہا کہ بجلی کی قیمت جو بڑھنی چاہیے تھی وہ جان بوجھ کر نہیں بڑھائی گئی جبکہ پاکستان کے مسائل حل کرنے کی بجائے جھوٹ بولنے اور دھوکہ دینے پر اکتفا کیا گیا۔ ہم بھی اگر وہی طریقہ اپناتے تو معاملات کو مزید خراب کر کے چلے جاتے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سابق وزیر خزانہ شوکت ترین مختلف جماعتوں میں رہے ہیں اور پاکستان کی تاریخ میں کبھی ایسا وقت نہیں آیا کہ مشکل فیصلے کیے لیکن مفتاح اسماعیل نے جس لگن سے کام کیا وہ تاریخی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم حقائق سے ملکی ضروریات سے خود کو علیحدہ نہیں کر سکتے لیکن پی ٹی آئی نے اپنے دور اقتدار میں جو فیصلے کیے اس پر افسوس ہے۔ سابق وزیرخزانہ کی گفتگو کا مقصد آئی ایم ایف پروگرام کی منظوری حاصل نہ کرنا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: اب مہنگے تیل سے نہیں شمسی توانائی سے بجلی پیدا ہوگی، وزیراعظم کی منظوری

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ سابق وزیر خزانہ سے وزیر خزانہ پنجاب نے یہ بھی پوچھا ریاست پر کیا اثر پڑے گا اور جو کچھ وزیر خزانہ خیبر پختونخوا نے کہا وہ بھی سب کے سامنے ہے۔ ملک سیلاب سے متاثر ہے اور ہمیں اکٹھے ہونے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کی سوچ یہی رہی کہ اپنی سیاست بچاؤں، جعلی پرچے بن سکتے ہیں اس میں دیر نہیں لگتی لیکن ہم نے کبھی ایسا نہیں کیا۔ نواز شریف کے لیے کوئی اور معیار نہیں ہوسکتا۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ جس نے وہی جرم کیا ہے تو سزا بھی وہی ہونی چاہیے لیکن آج وقت پرچے درج کرنے کا نہیں بلکہ متاثرین کے مسائل حل کرنے کا ہے۔ پاکستان کی تاریخ کا سب سے کم ٹیکس اس وقت پیٹرول پر ہے۔

متعلقہ خبریں