مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، ادارہ شماریات

اسلام آباد: ادارہ شماریات کے مطابق ملک میں مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔

ادارہ شماریات نے ماہانہ مہنگائی کے اعدادوشمار جاری کر دیئے۔ جس کے مطابق ایک ماہ میں مہنگائی کی شرح میں 2.4 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور مہنگائی ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق ماہ اگست میں افراط زر 27.3 فیصد ریکارڈ کی گئی جبکہ گزشتہ سال اگست میں مہنگائی کی شرح 8.4 فیصد تھی۔ شہروں میں مہنگائی کی شرح 26.2 فیصد ریکارڈ کی گئی اور دیہی علاقوں میں مہنگائی کی شرح 28.8 فیصد تک پہنچ گئی۔

یہ بھی پڑھیں: اکتوبر سے بجلی کے بلوں میں کمی آنا شروع ہو جائے گی، خرم دستگیر

ایک سال میں دال مسور 114.34 فیصد، دال ماش 52.70 فیصد، پیاز 90.14 فیصد اور ٹماٹر 38.02 فیصد مہنگے ہوئے۔ خوردنی تیل کی قیمت 74.66 فیصد اور گھی کی قیمت میں 70 فیصد تک اضافہ ہوا جبکہ ایک سال میں مرغی 60 فیصد تک مہنگی ہوئی۔

رپورٹ کے مطابق ایک سال میں سبزیاں 41.62 اور مصالحہ جات 17.43 فیصد مہنگے ہوئے جبکہ ایک سال میں بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 123.37 فیصد تک کا اضافہ ہوا۔ ایک سال میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 84.21 فیصد جبکہ اسٹیشنری 44.12 اور کپڑے 23.53 فیصد مہنگے ہوئے۔

متعلقہ خبریں