پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی کیس، عطاء تارڑ کی عبوری ضمانت منظور

لاہور کی سیشن عدالت نے پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی کیس میں مسلم لیگ ن کے رہنما عطاء اللّٰہ تارڑ کی عبوری ضمانت منظور کر لی ہے۔

عدالت نے پولیس کو عطا تارڑ کو 14 ستمبر تک گرفتار کرنے سے روک دیا ہے، جبکہ آئندہ سماعت پر پولیس سے اس حوالے سے رپورٹ طلب کی گئی ہے۔

درخواست میں عطاء اللّٰہ تارڑ نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ آرائی اور اقدامِِ قتل کے الزام سے میرا کوئی تعلق نہیں، ن لیگی رہنما نے اپنی درخواست میں مؤقف اپنایا تھا کہ پولیس نے سیاسی بنیاد پر مجھے مقدمے میں نامزد کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: عطاء اللّٰہ تارڑ سمیت 13 ن لیگی رہنماؤں کی حفاظتی ضمانت منظور

عطا تارڑ کا کہنا تھا کہ سیاسی انتقام اور جلسے جلوسوں کے علاوہ قوم کی خدمت بھی اہم ہے، پنجاب اسمبلی میں ہنگامہ ہم نے نہیں کیا نہ کروایا، سیلاب متاثرین کے دکھ کا انداز ہے، سیلاب متاثرین کی امداد کی جائے، یہ جلسوں اور دورے کرنے کا وقت نہیں ہے۔

ن لیگی رہنما نے کہا کہ سیلاب متاثرین کے علاقوں کے دورے کرنے چاہیے اور پنجاب کو بڑے بھائی ہونے کے ناطے آگے بڑھنا چاہیے تھا۔

متعلقہ خبریں