وزارت دفاع کا بعض سابق فوجیوں کی تنظیموں سے اظہار لاتعلقی کا اعلان

اسلام آباد: وزارت دفاع نے بعض سابق فوجیوں کی تنظیموں سے اظہار لاتعلقی کا اعلان کیا ہے۔

عدلیہ اور فوج سمیت تمام اداروں کو سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کیلئے استعمال نہ کیا جائے، صدر مملکت

ہم نیوز کے مطابق وزارت دفاع نے پاکستان ایکس سروس مین سوسائٹی اور ویٹرنز آف پاکستان سے متعلق وضاحت جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارت دفاع ایسی تنظیموں کی سرگرمیوں کو تسلیم یا ان کی توثیق نہیں کرتی ہے۔

وزارت دفاع کے ترجمان کے مطابق ان تنظیموں کے خیراتی مقاصد، سیلاب زدگان کی امداد اور عوامی خدمت کا وزارت سے کوئی تعلق نہیں ہے، ان تنظیموں کو مسلح افواج کی جانب سے بھی تسلیم نہیں کیا گیا ہے۔

جاں بحق افراد کے لواحقین کو 24 گھنٹوں میں معاوضہ دیا جائیگا، شفافیت پر سمجھوتہ نہیں ہو گا چاہے جان چلی جائے، وزیراعظم

ترجمان وزارت دفاع کے مطابق سابق فوجیوں کی ان تنظیموں کا مسلح افواج کی حمایت یا تسلیم کرنے کا دعویٰ حقائق کے منافی ہے، مسلح افواج نے ایسی سوسائٹیوں کو نہ تو تسلیم کیا ہے اور نہ ہی اس کی اجازت ہے، وزارت دفاع کے سابق فوجیوں کی سوسائٹیوں کے امور کار کے بارے میں رہنما اصول واضح ہیں۔

مجھے ڈر ہے امپورٹڈ حکومت کسی اور جنگ میں نہ دھکیل دے، وقت آئیگا دنیا کہے گی دیکھو! پاکستانی آرہا ہے، عمران خان

ہم نیوز کے مطابق وزارت دفاع کے ترجمان نے واضح کیا ہے کہ مستقبل کی مشاورت اور رہنمائی کیلئے وزارت دفاع میں یہ پالیسی دستیاب ہے، اس پالیسی اور اصولوں کی خلاف ورزی قابل تعزیر جرم ہوگی۔

متعلقہ خبریں