جب بھی ق لیگ کی حکومت آتی ہے آٹے کی قلت پیدا ہوجاتی ہے، عطا تارڑ

لاہور: مسلم لیگ ن کے رہنما اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی عطا تارڑ  کا کہنا تھا کہ جب بھی ق لیگ کی حکومت آتی ہے آٹے کی قلت پیدا ہوجاتی ہے، وزیر اعلیٰ اور ان کے صاحبزادے نے عثمان بزدار سمیت سارے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے ن لیگی رہنما نے کہا کہ ملک میں قدرتی آفت کی وجہ سے کروڑوں افراد بے گھر ہوچکے ہیں ، امدادی اور بحالی کے لیے اقدامات کررہے ہیں، خیبر پختونخوا، پنجاب،آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان میں حکومت نظر نہیں آرہی ہے، ایک سیاسی جماعت کروڑوں روپے خرچ کرکے جلسے کررہی ہے، جبکہ وزیر اعلی ٰپنجاب اور ان کا صاحبزادہ سیلاب متاثرہ علاقے میں نظر نہیں آتے۔

اٹھارہویں ترمیم کے بعد آٹے اور ادویات کی قلت کی ذمہ داری وفاقی حکومت کو مت دیں، انہوں نے الزام لگایا کہ آٹے کے ذخیرہ اندوزوں کی پشت پناہی کی جارہی ہے، جب بھی ق لیگ کی حکومت آتی ہے آٹے کی قلت پیدا ہوجاتی ہے، وزیر اعلیٰ اور ان کے صاحبزادے نے عثمان بزدار سمیت سارے ریکارڈ توڑ دئیے ہیں۔ ایک کلرک کو 22 اسکیل کا سیکریٹری بنا دیا جائے تو کیا ہوتا ہے، چیف سیکریٹری پنجاب نے کام کرنے سے انکار کردیا ہے، یہ حکومت چلنے والی نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں: عمران خان بہت بڑا جوا کھیلنے جا رہے ہیں، محمد زبیر

ن لیگی رہنما عطا تارڑ نے کہا کہ عمران نیازی اور پرویز الہٰی نے مجھ پر الزام لگائے تھے، دو ایم پی ایز نے میرے خلاف بیان بھی دیا تھا، میں ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی بھی کروں گا، یہ عوام میں جاکر بلند و بانگ دعوے کرتے ہیں، جب ثبوت دینے کی باری آتی ہے تو عدالت میں پیش نہیں ہوتے۔

عطا تارڑ نے دعوی کیا کہ میری ضمانت اس لیے ہوئی ہے کہ میرے خلاف کوئی ثبوت سامنے نہیں آیا، جو جلسوں میں بڑے بڑے تقریر کرتے ہیں وہ بتائیں فرح گوگی کو کب واپس لارہے ہیں؟ فرح سے کب تحقیقات کررہے ہیں؟  ڈی جی اینٹی کرپشن کو تین بار تبدیل کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پرویز الہٰی حکومت کا خاتمہ کرکے رہیں گے، پی ٹی آئی کرپشن کا احتساب ہوگا۔

متعلقہ خبریں