بھارت میں دہشتگردی کا الزام لگا کر 100 مسلمانوں کو گرفتار کر لیا گیا

نئی دہلی: بھارت میں دہشت گردی کا الزام لگا کر 100 مسلمانوں کو گرفتار کر لیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بھارت میں مسلمانوں کی تنظیم پاپولر فرنٹ آف انڈیا (پی ایف آئی) سے تعلق رکھنے والے افراد کے خلاف کارروائیاں کی جا رہی ہیں اور بھارتی پولیس کی جانب سے 100 افراد کو دہشت گردی کا الزام لگا کر گرفتار کر لیا گیا ہے۔

بھارتی پولیس کی جانب سے بھارت کی 10 ریاستوں میں کریک ڈاؤن کیا گیا اور پی ایف آئی کے رہنماؤں اور کارکنوں کے گھروں پر چھاپے مارے گئے۔ پولیس کی جانب سے الزام عائد کیا جا رہا ہے کہ کچھ لوگ نوجوانوں کو دہشت گردی پر اکسا رہے ہیں۔ جس کے ٹھوس ثبوت موجود ہیں۔

دہشت گردی کا الزام عائد کر کے ان لوگوں کو گرفتار کیا جا رہا ہے جو تربیتی کیمپ چلانے، فنڈز مہیا کرنے اور لوگوں کو پی ایف آئی میں شمولیت کی دعوت دے رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: یوکرین کا اقوام متحدہ سے روس کی ویٹو پاور ختم کرنے کا مطالبہ

اطلاعات کے مطابق بھارتی پولیس کی جانب سے بنگلور اور کرناٹکا کے تقریباً 10 مقامات پر چھاپے مارے گئے جن میں پارٹی کے رہنما کے گھر بھی شامل ہیں۔ گرفتاریوں کے خلاف احتجاج کرنے والوں کو بھی پولیس کی جانب سے گرفتار کیا جا رہا ہے۔

واضح رہے پی ایف آئی ایک اسلامی تنظیم ہے اور اس تنظیم پر حکومت کی جانب سے اس سے قبل بھی انتہاپسندی میں ملوث ہونے کے الزامات لگتے رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں