شام میں کشتی ڈوبنے سے 94 افراد ہلاک

دمشق: لبنان سے یورپ جانے والی کشی شام کے قریب الٹ گئی جس کے باعث 45 بچوں سمیت 94 افراد ڈوب گئے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق لبنان سے غیر قانونی طور پر سمندر کے راستے یورپ جانے والے تارکین وطن کی کشتی شام کے ساحل پر الٹ گئی۔ ہلاک ہونے والوں میں بڑی تعداد بچوں کی ہے۔

کشتی میں تقریباً 150 مسافر سوار تھے جو اچھے مستقبل کی خاطر غیر قانونی طور پر یورپ جا رہے تھے۔

کوسٹ گارڈ کے اہلکاروں نے سمندر سے اب تک 45 بچوں سمیت 94 تارکین وطن کی لاشیں نکال لی ہیں جبکہ دیگر کو بچالیا گیا ہے۔ بچ جانے والے افراد میں سے 20 اسپتال میں زیر علاج ہیں جن میں سے 3 کی حالت تشویشناک ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سابق جاپانی وزیر اعظم کی آخری رسومات سب سے زیادہ مہنگی

لبنان میں معاشی حالات کافی خراب ہونے کی وجہ سے لوگوں کی بڑی تعداد غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی کوشش کر رہی ہے جبکہ لبنان کی حکومت نے بینکوں سے پیسہ نکلوانے پر بھی پابندی عائد کر رکھی ہے۔

واضح رہے کہ لبنان میں معاشی بحران کے باعث بڑی تعداد میں شہری اچھے مستقبل کے لیے یورپی ممالک کا رخ کرتے ہیں اور ایسے حادثات کا شکار ہوجاتے ہیں۔

متعلقہ خبریں