ضمنی انتخابات میں شکست پر رہنماؤں کی تاویلیں مسترد، نواز شریف نے بڑے فیصلے کا عندیہ دیدیا

ضمنی انتخابات میں شکست پر رہنماؤں کی تاویلیں مسترد، نواز شریف نے بڑے فیصلے کا عندیہ دیدیا

لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد میاں نواز شریف نے صوبہ پنجاب میں ہونے والے ضمنی انتخابات میں شکست پر پارٹی رہنماؤں کی جانب سے پیش کی جانے والی تاویلیں یکسر مسترد کردی ہیں۔

چوروں کی غلامی سے بہتر ہے میں مرجاؤں، جینا نہیں چاہتا، عمران خان

اس ضمن میں ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ انتخابی شکست پر سابق وزیراعظم میاں نوازشریف نے حکومتی اور پارٹی عہدے الگ الگ کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف کی وطن واپسی تک پاکستان میں ن لیگ کا عبوری سیٹ اپ بنانے پر بھی غور و خوص شروع کردیا گیا ہے جس کے تحت عبوری سیٹ اپ کے سربراہ کو پارٹی معاملات اور دیگر اہم امور پر فیصلہ سازی کا مکمل اختیار ہو گا۔

آپ چاہتے ہیں عوام بشریٰ بی بی اور فرح کی کرپشن کے ساتھ کھڑی ہو؟ مریم اورنگزیب

پارٹی ذرائع کے مطابق تشکیل دیے جانے والے عبوری سیٹ اپ میں (ن) لیگ کی مرکزی نائب صدر مریم نواز کو کلیدی کردار دیا جائے گا، پارٹی کا عبوری سیٹ اپ نواز شریف کی وطن واپسی تک مکمل طور پر فعال و متحرک کردار ادا کرے گا۔

ہم نیوز کو ذرائع نے بتایا ہے کہ عبوری سیٹ اپ میں متحرک، فعال اور سخت مؤقف رکھنے والے رہنماؤں کو شامل کیا جائے گا، پارٹی قائد میاں نواز شریف آئندہ چند روز میں اس سلسلے میں پارٹی رہنماؤں سے مشاورت مکمل کرنے کے بعد اعلان کریں گے۔

متعلقہ خبریں