حکومت کیش فلو دکھا دے، مارکیٹ میں اعتماد بڑھے گا، ڈالر 178 سے 222 پر پہنچ گیا، شوکت ترین

پیٹرول پر سیلز ٹیکس ختم کردیا، قیمتیں ہمارے بس میں نہیں ہیں: شوکت ترین

کراچی: سابق وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ ہمارے دور میں ڈالر 178 روپے پر تھا آج 222 روپے پر پہنچ گیا، پیٹرول 150 تھا آج 234 روپے پر پہنچ گیا ہے۔

سب اچھا نہیں ہے، عمران خان نے معیشت پر خود کش حملہ کرکے وزارت عظمیٰ چھوڑی، بلاول بھٹو

پاکستان تحریک انصاف کے دور حکومت میں وزیر خزانہ رہنے والے ممتاز ماہر معاشیات شوکت ترین نے ملکی معیشت پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج بجلی گیس اور تیل کی قیمتوں میں ریکارڈ اضافہ ہو گیا ہے، مہنگائی کے باعث عوام کی کمر ٹوٹ گئی ہے، ہمارے دور میں بجٹ خسارہ کم تھا، آج یہ کئی گنا بڑھ گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کو ہم بار بار یہی کہتے ہیں کہ آپ اپنے کیش فلو دکھا دیں، کیش فلو دکھانے سے مارکیٹ میں اعتماد بڑھے گا، ہمارے دوست ممالک ہم پر اعتماد کرنے کو تیار نہیں ہیں، ان کے مطابق یہ حکومت 75 فیصد الیکشن ہار چکی ہے، پاکستان کو ایک مستحکم (اسٹیبل) حکومت کی ضرورت ہے، ہمیں اب الیکشن کی طرف جانا ہوگا۔

انتخابی مہم چلانے کی بھی ضررورت نہیں، اقتدار میں ہم ہی آئیں گے، عمران خان

سابق وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن نہ ہوئے تو بے چینی ملک میں جاری رہے گی، ہمیں کھڈے سے کیسے نکلنا ہے؟ اس پر ہم نے پلاننگ شروع کردی ہے، ہماری حکومت آئی تو ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کریں گے۔

عمران خان اب بھی بلیک میلنگ اور انتشار کی سیاست کر رہے ہیں، شاہد خاقان

ملکی معیشت پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے شوکت ترین نے کہا کہ ہم نے جب حکومت سنبھالی تومعاشی حالات بہت خراب تھے، ہمیں معیشت کو سنبھالنے کے لیے آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا، کورونا کے دوران معیشت سنبھالنا کسی چیلنج سے کم نہیں تھا، اس کے باوجود ہم نے پالیسیوں کے تحت ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا۔

متعلقہ خبریں