جنرل عاصم منیر نئے آرمی چیف، صدر نے سمری پر دستخط کر دیئے

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے لیفٹیننٹ جنرل ساحرشمشاد مرزا کو جنرل کے عہدے پرترقی اور انہیں  چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی تعینات کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

ایوان صدر کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے تحت بطور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی تعیناتی کا اطلاق 27 نومبر2022 سے ہو گا۔

اعلامیے کے تحت صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے نے لیفٹیننٹ جنرل سید عاصم منیر کو بھی جنرل کے عہدے پر ترقی دینے اور انہیں بطور چیف آف آرمی اسٹاف تعینات کرنے کی منظورری دی ہے۔

جنرل عاصم منیر کی بطور چیف آف آرمی اسٹاف تعیناتی کا اطلاق 29 نومبر 2022 سے ہو گا۔

صدر مملکت نے ترقیاں اور تعیناتیاں آئین کے آرٹیکل 48 اور پاکستان آرمی ایکٹ1952کے سیکشن 8 اےاور 8 ڈی کے تحت کی ہیں۔

واضح رہے کہ صدر مملکت نے اس حوالے سے آج موصول ہونے والی سمری پردستخط کر دیے ہیں جس کے بعد جنرل عاصم منیر پاک فوج کے نئے سربراہ اور جنرل ساحر شمشاد مرزا چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف بن گئے ہیں۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے اس سے قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ ’ٹوئٹر‘ پر لکھا تھا کہ لیفٹیننٹ جنرل سید عاصم منیر کو آرمی چیف مقرر کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا جب کہ ساحر شمشاد مرزا کو چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی بنانے کا فیصلہ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کو تعیناتیوں سے متعلق سمری ارسال کر دی گئی ہے۔

پاک فوج کے نامزد سربراہ جنرل عاصم منیر بہترین پیشہ وارانہ کیریئر کے حامل ہیں اور فور اسٹار جنرلز کی تعیناتی کی سینیارٹی لسٹ میں جنرل عاصم منیر پہلے نمبر پر تھے۔ لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کور کمانڈ، آئی ایس آئی اور ملٹری انٹیلی جنس کے سربراہ رہے۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر نے آفیسرز ٹریننگ اسکول سے تربیت مکمل کی اور انہوں نے پاک فوج کی فرنٹیئر فورس رجمنٹ میں کمیشن حاصل کیا۔ لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر 2014 میں کمانڈر فورس کمانڈ ناردرن ایریا تعینات ہوئے اور 2017 میں ڈی جی ملٹری انٹیلی جنس کے عہدے پر فائز ہوئے۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم کو اکتوبر 2018 میں ڈی جی آئی ایس آئی تعینات کیا گیا تھا اور جون 2019 میں کور کمانڈر گوجرانوالہ کے عہدے پر تعینات ہوئے جبکہ اکتوبر 2021 سے جی ایچ کیو میں کوارٹر ماسٹر جنرل کے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔

لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر حافظ قرآن ہیں اور انہیں دوران تربیت اعزازی شمشیر سے بھی نوازا گیا۔

نامزد چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ساحر شمشاد مرزا بہترین پیشہ وارانہ کیریئر کے حامل ہیں اور فور اسٹار جنرلز کی تعیناتی کی سینیارٹی لسٹ میں جنرل ساحر شمشاد مرزا دوسرے نمبر پر تھے۔

لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرز انے پی ایم اے سے تربیت مکمل کر کے پاک فوج میں شمولیت اختیار کی اور اپنے فوجی کیرئیر کا آغاز 8 سندھ رجمنٹ سے کیا۔ وہ ستمبر 2012 سے کور کمانڈر راولپنڈی فرائض سرانجام دے رہے تھے۔ وہ جون 2019 میں چیف آف جنرل اسٹاف کے عہدے پر فائز ہوئے۔

لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا اکتوبر 2018 میں وائس چیف آف جنرل اسٹاف تعینات ہوئے اور 2015 سے 2018 تک ڈی جی ملٹری آپریشنز کی خدمات انجام دیں۔ انہوں نے بطور لیفٹیننٹ کرنل ، برگیڈیئر اور میجر جنرل ملٹری آپریشنز ڈائریکٹوریٹ میں خدمات انجام دیں۔

لیفٹیننٹ جنرل ساحر شمشاد مرزا ٹی ٹی پی اور دیگر دہشت گرد گروپوں کے خلاف آپریشنز سپروائز کیے اور انٹرا افغان ڈائیلاگ میں بھی متحرک کردار ادا کیا۔ وہ گلگت بلتستان اصلاحات کمیٹی کا بھی حصہ رہے۔ جی او سی 40انفینٹری ڈویژن اوکاڑہ کی خدمات بھی انجام دیں۔

متعلقہ خبریں