صدر ایردوان دور اندیش ہیں، امن کیساتھ رہنا چاہتے ہیں تو جنگ کیلئے بھی تیار رہنا ہو گا، وزیراعظم

استنبول: وزیراعظم میاں شہباز شریف نے صدر رجب طیب ایردوان کو دور اندیش رہنما قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر آپ امن کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں تو جنگ کے لیے بھی تیار رہنا ہو گا۔

ترکیہ کے شہر استنبول میں دھماکہ، 6 افراد جاں بحق، 53 زخمی

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی صدر اور وزیراعطم میاں شہباز شریف نے استنبول کے شپ یارڈ میں پی این ایس خیبر کی لانچنگ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ترکیہ میرے لئے دوسرا گھر ہے، یہاں آ کر بہت خوشی محسوس کر رہا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ آج کا دن ہمارے تعلقات میں ایک عظیم دن ہے، پاکستان اور ترکیہ کے درمیان گہرے اور تاریخی تعلقات ہیں، ترکیہ نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا، ترکیہ نے ہر عالمی فورم پر ہمیشہ پاکستان کا ساتھ دیا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ صدر رجب طیب ایردوان کی زیرقیادت ترکیہ ایک جدید فلاحی ریاست بن چکا ہے، آج ترکیہ کے دور دراز علاقوں میں بھی تمام تر سہولیات میسر ہیں، آج ہم اس تاریخی تقریب میں شرکت کیلئے اکٹھے ہوئے ہیں، پاکستان اور ترکیہ مشترکہ طور پر اپنی دفاعی صلاحیت کو بڑھا رہے ہیں۔

الیکشن کی تاریخ لینی ہے تو سیاستدان بنیں اور مذاکرات کریں، رانا ثنا اللہ

میاں شہباز شریف نے کہا کہ ہمارا ملک ترقی پذیر ہے، آج دنیا متعدد تنازعات کا سامنا کر رہی ہے، پاک ترکیہ تعلقات وقت کے ساتھ مزید مضبوط ہوں گے، دنیا بھر کی طرح پاکستان کو بھی توانائی کی قلت کا سامنا ہے، پاکستان قابل تجدید اور سستے توانائی ذرائع کیلئے اقدامات کر رہا ہے، پاکستان اور ترکیہ کو قابل تجدید توانائی کے حصول کیلئے مل کر کام کرنا ہو گا۔

وزیراعظم نے ترک سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ترکی ماحولیاتی آلودگی میں کمی کیلئے بھی مل کر کام کر سکتے ہیں، پاکستان اور ترکیہ کو تجارتی تعلقات کو مزید فروغ دینا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو حالیہ دنوں میں تاریخ کے بدترین سیلاب کا سامنا کرنا پڑا، ترکیہ نے سیلاب متاثرین کی بڑھ چڑھ کر مدد کی، ترکیہ نے امدادی سامان سے بھری 30 ٹرینیں پاکستان بھجوائیں، ترکیہ سے 15 طیارے امدادی سامان لے کر پاکستان پہنچے۔

امریکہ کی ترکیہ کو روس سے تعلقات رکھنے پر پابندی کی دھمکی

وزیراعظم میاں شہباز شریف نے جہاز کی تیاری میں حصہ لینے والوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ روس اور یوکرین سے گندم درآمد کرنے کے معاہدے میں ترک صدر کا کردار قابل ستائش ہے۔

متعلقہ خبریں