دنیا کا سب سے بڑا آتش فشاں پھٹ پڑا

 ہوائی میں واقع دنیا کا سب سے بڑا فعال آتش فشاں ماونا لوا پھٹ پڑا۔

آتشاں فشاں ماونا لوا 40 سال بعد ایک بار پھر پھٹ پڑا ہے۔ آتش فشاں پھٹنے پر قریبی آبادیوں کو الرٹ کر دیا گیاہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ  لاوا کا بہاوزیادہ تر چوٹی کے اندر ہی ہےاور آبادیوں  کو فی الحال کوئی خطرہ نہیں ہے لیکن صورتحال تیزی سے بدل سکتی ہے۔

آتشاں فشاں پھٹے پر وارننگ الرٹ بھی جاری کردیا گیاہے  جس میں آبادیوں کو چوکس رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔فی الحال انخلا کے لیے کوئی احکامات جاری نہیں کیے گئے۔

یہ بھی پڑھیں:ٹونگا آتش فشاں کا دھماکہ ایٹم بم سے بھی زیادہ طاقتور

یہ آتش فشاں ہوائی کے آتش فشاوں کے نیشنل پارک میں واقع ہے۔یہ سطح سمندر سے 13,679 فٹ  بلند ہے اور 2,000 مربع میل سے زیادہ کے رقبے پر پھیلا ہوا ہے۔

امریکی جیالوجیکل سروے کے مطابق ماونا لووا  1983 سے اب تک 33 بار پھٹ چکا ہے۔ اور  1984 میں آخری بار پھٹنے سے جزیرے کے سب سے زیادہ آبادی والے شہر ہیلو  کے پانچ میل کے اندر لاوا بہا تھا۔

متعلقہ خبریں