ملک میں 131 ادویات کی قلت، جان بچانے والی دوائیں بھی شامل، حکام نے ڈریپ کو آگاہ کردیا

ملک میں 131 ادویات کی قلت، جان بچانے والی دوائیں بھی شامل، حکام نے ڈریپ کو آگاہ کردیا

اسلام آباد: ملک بھر میں جان بچانے والی ادویات سمیت کئی دیگر ادویات کی قلت پیدا ہوگئی، یہ بات وفاقی وزارت صحت کے حکام نے ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) کو لکھے گئے خط میں کہی ہے۔

ای سی سی، 18 ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دیدی

ڈریپ میں لکھے جانے والے خط میں حکام نے بتایا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اس وقت 131 ادویات ناپید ہو چکی ہیں جن میں سے زیادہ تر ملٹی نیشنل فارما سیوٹیکل کمپنیز کی ہیں۔

اس ضمن میں سیکریٹری کوالٹی کنٹرول بورڈ اسلام آباد نے کہا ہے کہ اسلام آباد سمیت پورے ملک میں ضروری 131 ادویات میسر نہیں ہیں۔

ڈریپ نے آئرن گولی 100اور فولک ایسڈ 0.35 ایم جی کے بیج کو 2781 غیر معیاری قرار دیدیا

سیکریٹری کوالٹی کنٹرول بورڈ اسلام آباد نے ڈریپ حکام سے درخواست ہے کہ ادویات کی بلا تعطل سپلائی کے لیے درکار ضروری اقدامات کیے جائیں،۔

وفاقی وزارت صحت کے حکام کا اس حوالے سے مؤقف ہے کہ اکثر ملٹی نیشنل کمپنیوں نے ادویات کی قیمتوں کے تنازعے پر پیداوار بند کر دی ہے۔

شوگر کے مریضوں کیلیے مفت ادویات، فنڈز جاری

ڈریپ حکام کا کہنا ہے کہ ناپید ہونے والی اکثر ادویات کی قیمتوں میں اضافے کے لیے ڈریپ نے پہلے ہی سفارش کر رکھی ہے، ادویات کی کی عدم دستیابی کی صورتحال کا بغور جائزہ لے رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں