لائیو : خیبرپختونخوا اسمبلی کے نتائج

اسلام آباد: خیبرپختونخوا اسمبلی کی 124 نشستوں کے انتخابات کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج آنا شروع  ہو گئے ہیں۔

خیبر پختونخوا اسمبلی میں نشستوں کی کل تعداد 124  ہے جس میں 99  جنرل نشستیں، 22  خواتین کے لیے اور تین نشستیں غیر مسلموں کے لیے مخصوص ہیں۔

صوبے میں رجسٹرڈ ووٹروں کی کل تعداد ایک کروڑ 52 لاکھ 16 ہزار 299 ہے جن میں سے مرد ووٹروں کی تعداد 87 لاکھ اور خواتین ووٹروں کی تعداد 66 لاکھ سے زائد ہے۔

1 سال پہلے

الیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق کے پی اسمبلی میں پاکستان مسلم لیگ(ن) کی پانچ سیٹیں ہیں۔

چھ آزاد امیدوار خیبرپختونخوا اسمبلی کی سیٹیں لینے میں کامیاب ہو ئے ہیں۔

ای سی پی کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹیرین کے پی اسمبلی میں چار سیٹیں لے سکی ہے۔

1 سال پہلے

مصدقہ نتائج کے مطابق عوامی نیشنل پارٹی(اے این پی) خیبرپختونخوا اسمبلی میں چھ سیٹیں لینے میں کامیاب ہوئی ہے۔

1 سال پہلے

ای سی پی کے مطابق متحدہ مجلس عمل پاکستان خیبرپختونخوا اسمبلی نے دس سیٹیں لینے میں کامیاب ہوئی ہے۔

1 سال پہلے

الیکشن کمیشن آف پاکستان کے تصدیق شدہ نتائج کے مطابق خیبر پختونخوا اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف  66 سیٹیں  لینے میں کامیاب ہوئی ہے۔

1 سال پہلے

پی کے 22 بونیر کے غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق  سرادرحسین بابک 22 ہزار 385 ووٹ لے کرکامیاب قرار پائے ہیں۔
جماعت اسلامی  کے راج ولی 17 ہزار79 ووٹ لے کردوسرے نمبرپر رہے اور پی ٹی آئی کے  عبدالکبیر خان 16ہزار 249 ووٹ لے کرتیسرے نمبرپر رہے ہیں۔

1 سال پہلے

پی کے61 کے غیر حتمی اور غیر سرکاری مکمل نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے  پرویز خٹک 20ہزار647 ووٹ لے کرکامیاب ٹھہرے ہیں۔
عوامی نیشنل پارٹی کے پرویزاحمد خان 16ہزار54 ووٹ لے سکے ہیں۔

1 سال پہلے

پی کے90 بنوں کا مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ
ایم ایم اے کے اکرم خان درانی 32 ہزار608 ووٹ لے کر کامیاب
پی ٹی آئی کےملک عدنان خان 32 ہزار596 ووٹ لے سکے

1 سال پہلے

پی کے 53 مرادن کا مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ
اے این پی کے امید حیدرہوتی 29 ہزار166 ووٹ لے کر کامیاب
پی ٹی آئی کے عمرفاروق 22 ہزار437 ووٹ لے سکے

1 سال پہلے

پی کے90 بنوں کا مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ
ایم ایم اے کے اکرم خان درانی 32 ہزار608 ووٹ لے کر کامیاب
پی ٹی آئی کے ملک عدنان خان 32 ہزار596 ووٹ لے سکے

1 سال پہلے

پی کے 64 نوشہرہ کا مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ

پی ٹی آئی کے پرویزخٹک 38 ہزار234 ووٹ لے کر کامیاب
اے این پی کے محمد شاہد 19 ہزار655 ووٹ لے کردوسرےنمبر پر

1 سال پہلے

پی کے 72 پشاور کے غیر حتمی سرکاری نتائج
پی ٹی آئی کے فہیم خان 15 ہزار410 ووٹ لے کر کامیاب
ن لیگ کے ظاہر خان پانچ  ہزارپانچ سو84 ووٹ لے کردوسرے نمبرپر

1 سال پہلے

پی کے36 ایبٹ آباد کا مکمل غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ
تحریک انصاف کے نذیراحمد عباسی 28ہزار600 ووٹ لے کر کامیاب
آزاد امیدوار ساجد فرید احمد خان 25 ہزار 713ووٹ لے سکے۔

1 سال پہلے

پی کے 67 پشاور سے پی ٹی آئی کے ارباب وسیم 16 ہزار912 ووٹ لے کر کامیاب
ایم ایم اے کے آصف اقبال داودزئی 11 ہزار648 ووٹ لے کردوسرے نمبرپر

1 سال پہلے

پشاور پی کے 75 کے غیر سرکاری غیر حتمی نتائج

پی ٹی آئی کے ملک واجد اللہ 27659 ووٹ لیکر کامیاب قرار

اے این پی کے سید عاقل شاہ 8464 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر

1 سال پہلے

پشاور کے حلقہ پی کے 73 پر غیر حتمی سرکارج نتائج

پی ٹی آئی کے تیمور سلیم خان15449 ووٹ لیکر کامیاب قرار

متحدہ مجلس عمل کے امان اللہ3796 ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر

1 سال پہلے

پشاور حلقہ پی کے 79 کے سرکاری غیر حتمی نتائج

پی ٹی آئی کے فضل الہی 18044 ووٹ لے کر کامیاب قرار

متحدہ مجلس عمل کے ملک نوشاد خان 5770 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر

1 سال پہلے

پی کے 63 نوشہرہ سے تحریک انصاف کے جمشید الدین 24760 ووٹ لے کر کامیاب

ن لیگ کے اختیار ولی 13960 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر

1 سال پہلے

پی کے 20 بونیر سے تحریک انصاف کے ریاض خان 15947 ووٹ لے کر کامیاب

آزاد امیدوار بخت جہان 12819 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

1 سال پہلے

پی کے 63 نوشہرہ سے تحریک انصاف کے جمشید الدین 24760 ووٹ لے کر کامیاب

ن لیگ کے اختیار ولی 13960 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

1 سال پہلے

پی کے 83 ہنگو سے تحریک انصاف کے شاہ فیصل خان 13943 ووٹ لے کر کامیاب

متحدہ مجلس عمل کے عبیداللہ 10141 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

1 سال پہلے

پی کے 20 بونیر سے تحریک انصاف کے ریاض خان 15947 ووٹ لے کر کامیاب

آزاد امیدوار بخت جہان 12819 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

1 سال پہلے

پی کے 5 سوات سے تحریک انصاف کے فضل حکیم خان 22463 ووٹ لے کامیاب

مسلم لیگ ن کے ارشاد علی 8659 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے

1 سال پہلے

پی کے 68 سے تحریک انصاف کے امیدوار ارباب جہانداد خان 22569 ووٹ لے کر کامیاب

1 سال پہلے

پی کے 76 کے غیر سرکاری غیر حتمی نتائج

تحریک انصاف کے آصف خان 19041 ووٹ لے کر کامیاب

1 سال پہلے

پی کے47 صوابی5 سےپی ٹی آئی کے شہرام خان 19440 ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ اے این پی کے امیر رحمان 11756 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 23 شانگلہ سے پی ٹی آئی کے شوکت علی 16571 ووٹ لے کرکامیاب، ن لیگ کےمحمدارشاد خان 12219 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے29 بٹگرام سے پی ٹی آئی کے زبیر خان 13531 ووٹ کے ساتھ کامیاب، ایم ایم اے کے شاہ حسین خان 9525 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 41 ہری پور سے پی ٹی آئی کے امیدوار ارشد ایوب 39775 ووٹ لے کر کامیاب، ن لیگ کے راجہ فیصل زمان 25774 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے28 بٹگرام سےپی ٹی آئی کےامیدوارزبیرخان 13500 ووٹ لےکرکامیاب، ایم ایم اے کےشاہ حسین 9000 ووٹ لےکردوسرےنمبرپر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 16 لوئر دیرسےآزاد امیدوار محمد حذیفہ کامیاب، اے این پی کے بہادر خان دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 83 ہنگو سے پی ٹی آئی کے شاہ فیصل کامیاب، ایم ایم اے کے عبیداللہ 8500 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پررہے۔

1 سال پہلے

پی کے 85 کرک سے پی ٹی آئی کے فرید خان کامیاب، ایم ایم اے کے نثار گل 21084 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

1 سال پہلے

پی کے 26 کوہستان سے آزاد امیدوارعبدالغفار کامیاب، آزاد امیدوار افسر خان 13700 ووٹ لے کردوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 81 کوہاٹ سے پی ٹی آئی کے امتیاز شاہد کامیاب، ایم ایم اے کے شاہ داد خان دوسرے نمبر پررہے.

1 سال پہلے

پی کے 14 لوئر دیرسے پی ٹی آئی کے ہمایوں خان کامیاب، پیپلزپارٹی کے بخت بیدار 13064 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 37 ایبٹ آباد سے ن لیگ کے سردار اورنگزیب کامیاب، پی ٹی آئی کے وقار نبی 23056 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

1 سال پہلے

پی کے 41 ہری پور سے پی ٹی آئی کےارشد ایوب خان کامیاب، ن لیگ کے راجہ فیصل زمان 25774 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر۔

1 سال پہلے

پی کے 31 مانسہرہ سے پی ٹی آئی کےبابر سلیم کامیاب، ایم ایم کے خرم شہزاد دوسرے نمبر پر رہے۔

پی کے 23 شانگلہ سے شوکت یوسفزئی کامیاب، ن لیگ کے محمد ارشاد 9200 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پررہے۔

پی کے 39 ایبٹ آباد سے پاکستان تحریک انصاف کے مشتاق غنی کامیاب، ن لیگ کےعنایت اللہ خان 17549 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔

پی کے 84 ہنگو سے پی ٹی آئی کے محمد ظہور کامیاب، ایم ایم اے کے جہان زیب 6200 ووٹ لے کردوسرے نمبر پر رہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز