عیدالاضحیٰ: سبزی کی قیمتیں نئی بلندیوں پر

August 9, 2018

اسلام آباد/کراچی/لاہور/پشاور/ کوئٹہ : عیدالاضحیٰ کے نزدیک آتے ہی سبزی کی قیمتوں کوپر لگ گئے ہیں جس کی وجہ سے مہنگائی کے ہاتھوں پہلے ہی پریشان عوام  سخت اذیت میں مبتلا ہوگئے ہیں۔

حسب روایت ضلعی انتظامیہ اورپرائس کنٹرول کمیٹیوں نے مکمل خاموشی اختیارکر رکھی ہے جس کے سبب ناجائز منافع خور دن دیہاڑے لوگوں کو لوٹ رہے ہیں لیکن ان کی گرفت کرنے والا کوئی نظر نہیں آتا۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی سبزی منڈی میں پیاز کی دھڑی ( پانچ کلو)  210 روپے سے لے کر 240 روپے تک میں دستیاب ہے۔ بازار میں  پیاز کی دھڑی 270 روپے سے لے کر 330 روپے تک میں فروخت کی جارہی ہے۔

ادرک سبزی منڈی میں 60 سے 80 روپے فی پاؤ تک میں فروخت ہورہی ہے جب کہ عام مارکیٹ میں اس کی قیمت فروخت 80 سے لے کر 140 روپے فی پاؤ تک ہے۔

سبزی منڈی میں لہسن دیسی اورلہسن چائنا 120 روپے فی کلو سے لے کر 240 روپے فی کلو تک میں دستیاب ہے جب کہ عام مارکیٹ میں اس کی قیمت دو سے تین گنا وصول کی جارہی ہے۔

اسی طرح لیموں، پودینہ، ٹماٹر، ہری مرچ، ہرا دھنیا، لوکی، تورئی، ٹنڈا، کاشی پھل (کدو)، پالک، شملہ مرچ، آلو اور اروی سمیت دیگر تمام سبزیوں کی قیمتوں میں گزشتہ 15 روز کے دوران 15 سے 30 فیصد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

ہم نیوز کے مطابق کراچی، لاہور، پشاور اور کوئٹہ سمیت ملک کے مختلف شہروں اور علاقوں میں سبزی کے نرخوں میں بے پناہ تیزی دیکھنے میں آئی ہے جو ’روایتی‘ ہے۔

اسلام آباد کی سبزی منڈی میں خریداری کے لیے آئے شہری کہتے ہیں کہ عیدالاضحیٰ کی آمد سے قبل ہرسال پیاز، لہسن، ادرک، ہرا دھنیا، پودینہ، ہری مرچ، لیموں اور ٹماٹرکی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ ہونا معمول کی بات ہے اورانتظامیہ و پرائس کنٹرول کمیٹی کی ’بے حسی‘ و ’خاموشی‘ بھی نئی نہیں ہے۔

شہریوں کا مؤقف ہے کہ دکاندار ہرسال ان سبزیوں کی قیمتوں میں بے پناہ اضافہ کرتے ہیں جن کا استعمال عید قرباں کے موقع پر زیادہ ہوتا ہے۔

کراچی میں شہریوں کا کہنا ہے کہ عیدالاضحیٰ کے موقع پر سب سے زیادہ مہنگا ’ہرا پپیتا‘ ہوتا ہے کیونکہ باربی کیو وغیرہ میں بہت استعمال ہوتا ہے۔ عام دنوں کی نسبت عید قرباں کے موقع پر ہرا پپیتا سبزی کی دکانوں پر دستیاب ہوتا ہے۔

لاہور کے شہری ٹماٹر کی بڑھتی قیمتوں سے باقاعدہ پریشان نظر آتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ جس تیز رفتاری سے ٹماٹر کی قیمت کو پر لگ رہے ہیں کچھ نہیں کہا جاسکتا ہے کہ عید قرباں پر ٹماٹروں کی قیمت کیا ہوگی؟

آڑھیتوں کے مطابق مارکیٹ میں اس وقت زیادہ تر مانسہرہ کا ٹماٹر فروخت ہورہا ہے کیونکہ پنجاب اور سندھ کی فصل آنے میں وقت درکار ہے۔ تاہم خریدار اسے مہنگائی کا سبب نہیں مانتے اور کہتے ہیں کہ عید سے قبل ٹماٹر کو کولڈ اسٹوریج میں رکھ کر قیمتیں بڑھائی جا رہی ہیں۔

خریداروں کے مطابق ڈیڑھ ہفتہ قبل تک منڈی میں 50 تا 60 روپے فی کلو فروخت ہونے والا ٹماٹر اب 90 تا 130 روپے کلو میں دستیاب ہے جب کہ عام بازاروں میں اس کے نرخ کہیں ذیادہ ہیں۔

گزشتہ عیدالاضحی پر اسلام آباد میں ٹماٹر 200 روپے فی کلو سے زائد فروخت ہوتا رہا لیکن متعلقہ اداروں میں سے کسی نے کوئی فعالیت نہیں دکھائی۔

سبزی منڈی میں کاروبار کرنے والے آڑھتی کہتے ہیں کہ یہ درست ہے کہ ہرسال عیدالاضحیٰ کے موقع پر مخصوص سبزیوں کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافہ ہوتا ہے لیکن اس کے ذمہ دار ہم نہیں ہیں بلکہ وہ اسٹور مالکان ہیں جو معمول کی سپلائی روک کر ذخیرہ اندوزی کرتے ہیں۔

آڑھتیوں کا کہنا ہے کہ اگر انتظامیہ اسٹورمالکان کے ’کولڈ اسٹوریج‘ چیک کرلے تو تمام حقائق منظر عام پرآجائیں گے۔ وہ سبزی کی قیمتوں میں اضافےکا ایک بڑا سبب ’ساون‘ کو بھی قراردیتے ہیں۔

ساون میں ہونے والی بارشوں کے نتیجے میں زیادہ تر ہرے پتے والی سبزیاں خراب ہوجاتی ہیں جو قیمتوں میں اضافے کا ایک بڑا سبب بھی بنتی ہیں۔

اس کے علاوہ موسم کی تبدیلی بھی قیمتوں میں اضافے کی ایک وجہ قرار دی جاتی ہے کیونکہ گرمی کی سبزیوں کا اختتام ہورہا ہوتا ہے اور سردی کی سبزیوں کی آمد میں وقت درکار ہوتا ہے، طلب و رسد کا یہ فرق منڈی کے ’بھاؤ‘ بڑھا دیتا ہے۔

سبزی فروش کہتے ہیں کہ جب ہمیں سبزی، منڈی سے مہنگی ملے گی تو ہم اسے سستا کیسے فروخت کرسکتے ہیں؟ وہ اس ضمن میں سارا الزام سبزی منڈی کے آڑھتیوں پر ڈالتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز