ایگزیاٹا نے پاکستان کے ساتھ 940 ملین ڈالر کا معاہدہ منسوخ کر دیا

کوالا لمپور: ایشیا میں موبائل انفراسٹرکچر فراہم کرنے والی ملائشین کمپنی ایگزیاٹا نے پاکستان کے ساتھ ایک ٹیلی کام ٹاور کمپنی خریدنے کا 940 ملین ڈالر کا معاہدہ منسوخ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

ایگزیاٹا کے ذیلی ادارے ایڈوٹکو کی جانب سے پیر کو جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ وہ دیودار(ٹیلی کام کمپنی) کو خریدنے کے عمل کو آگے نہیں بڑھائے گی۔ واضح رہے کہ دیودر پاکستان موبائل کمیونیکیشن کا ایک یونٹ ہے جس کے پاس 13000 ٹاورز ہیں۔

گزشتہ سال اگست میں کی گئی اس ڈیل کے بعد ایڈوٹکو عالمی سطح پر آٹھویں بڑی ٹاورکمپنی اور دوسری بڑی  بین الاقوامی ٹاور آپریٹر کا درجہ اختیارکر سکتی تھی۔ 

ڈیل منسوخ کیے جانے سے متعلق ایگزیاٹا کی جانب سے جاری ایک بیان میں وضاحت کی گئی کہ ریگولیٹری اپروول کے ساتھ ساتھ فروخت سے متعلق کچھ شرائط پوری نہیں کی گئی تھیں۔ 

منگل کی صبح ایک گھنٹے کے وقفے سے ٹریڈنگ شروع کرنے کے بعد ایگزیاٹا کے حصص میں 2.4 فیصد گراوٹ دیکھنے میں آئی۔ 

چیف ایگزیکٹو سریش سدھو کا کہنا تھا کہ ہم پاکستان کے ساتھ تعلقات بحال رکھیں گے اور پاکستان میں موجود اپنی یونٹ کے زیر سایہ کاروباری سرگرمیاں بھی جاری رکھیں گے۔ کمپنی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم جنوبی اور جنوب مشرقی ایشیائی ممالک کے ساتھ بھی کاروباری تعلقات بہتر بنائیں گے۔ 

ایڈوٹکو ملائیشیا سمیت پاکستان، سری لنکا، کمبوڈیا، بنگلہ دیش اور میانمار میں 28 ہزار سے زائد ٹیلی کام ٹاورز کا علاقائی پورٹ فولیو چلاتی ہے۔ 

 

 
متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز