ڈاکٹر فاروق ستار کا بڑی تحریک چلانے کا اعلان

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار کے ہم خیال سابق اراکین قومی و صوبائی اسمبلی نے ساتھ دینے سے انکار کر دیا ہے۔ فاروق ستار کہتے ہیں کہ میں ایم کیو ایم پاکستان کو تباہ ہونے نہیں دوں گا۔سابق میئر کراچی نے پارٹی کی عزت و وقار کی بحالی کے لیے جلد ہی کارکنان کے ساتھ مل کر ایک بڑی تحریک چلانے کا اعلان کردیا ہے۔

ہم نیوز کے مطابق ایم کیو ایم رہنما ڈاکٹر فاروق ستار کی سیاسی تنہائی میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔ ایم کیو ایم رہنما علی رضا عابدی، ساجد احمد، شیخ صلاح الدین اور جمال احمد نے بھی پی آئی بی جانے سے انکار کر دیا ہے جب کہ فاروق ستار کی کامران ٹیسوری سے رابطے کی تمام ترکوششیں بھی نا کام ہو گئی ہیں۔

فاروق ستار نے اپنی تنہائی کو چھپانے کی کوشش کرتے ہوئے کراچی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں تو کسی سے بھی ناراض نہیں ہوں۔ ان کا اصرار تھا کہ  یہاں مسئلہ صرف ایم کیو ایم پاکستان کو بچانے کا ہے کیونکہ کچھ لوگوں کی جانب سے جماعت کو غلط ڈگر پر چلایا جا رہا ہے۔

ایم کیو ایم رہنما نے کہا کہ مجھے پارٹی کے کسی بھی اجلاس یا مشاورت میں شامل نہیں کیا جا رہا تاہم ایم کیو ایم کے کارکنان ہی انٹرا پارٹی انتخابات میں فیصلہ کریں گے کہ وہ کس کے ساتھ ہیں؟ ان کا سوال تھا کہ اب کیا ہم اتنے گئے گزرے ہیں کہ مجھے منانے کی بات کی جائے گی۔

فاروق ستار نے کہا کہ کیا میں یہ کسی کو کہوں گا کہ آپ میری عزت کریں ؟ میں نے فیصل سبزواری سمیت دیگر لوگوں کو انگلی پکڑ کر چلانا سکھایا ہے اور لوگوں کو بتایا کہ الزام بھی لگاؤ اور اپنا احتساب بھی کرو۔

ایم کیو ایم رہنما نے پارٹی کی عزت و وقار کی بحالی کے لیے جلد ہی کارکنان کے ساتھ مل کر ایک بڑی تحریک چلانے کا اعلان کر دیا۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز