کسی بھی فرد جرم کے بغیر قید میرے والد ابھی تک طبی سہولیات کے منتظر ہیں،بلاول

چیئرمین پاکستان  پیپلزپارٹی نے کہا کہ صدر زرداری کو طبی سہولیات نہ دے کر بنیادی انسانی حق سے ان کو محروم کیا جارہا ہے، نہ صرف انہیں اسپتال نہیں لے جایا گیا بلکہ فریج تک مہیا نہیں کیا گیا کہ وہ اپنی انسولین اور دیگر دوائیں رکھ سکیں۔

آصف زرداری کٹھ پتلی حکومت کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے،بلاول

انہوں نے یہ بات آج اڈیالہ جیل راولپنڈی میں سابق صدر آصف علی زرداری سے ملاقات کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو میں کہی ہے۔

سیاسی قیدیوں کی رہائی کیلئے متحدہ اپوزیشن کا پارلیمنٹ کے باہر احتجاج

اس موقع پر گرفتار رہنماؤں کی تصاویر بھی سجائیں۔ اسپیکراستعفیٰ دو کے نعرے لگائے۔ تقریروں میں کہا کہ حق نمائندگی نہ دیا گیا تو احتجاج کا دائرہ بڑھائیں گے۔

سابق صدر کو قید تنہائی میں رکھا جا رہا ہے،پیپلزپارٹی

سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ ایک بھی ایسا کیس نہیں کہ صدر زرداری کا براہ راست لنک ہو۔ سابق صدر 68دن نیب کی حراست میں رہے مگر کچھ نہیں نکلا۔

آصف زرداری اور فریال تالپور سے دو دن ملاقات کی درخواست مسترد

نیب پراسیکیوٹر نے ہفتے میں دو دن ملاقات پر اعتراض کیا تھا۔

’پیپلز پارٹی کے ساتھ سب کچھ طے شدہ منصوبے کے تحت کیا جا رہا ہے‘

سعید غنی نے کہا کہ آصف علی زرداری کو عدالتی حکم کے باوجود سہولیات فراہم نہیں کی جارہیں۔

سابق صدر آصف زرداری کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا جائے، شیری رحمان

شیری رحمان نے کہا کہ حکومت کی جانب سے سابق صدر زرداری کو اسپتال سے جیل منتقل کرنا ان کی زندگی کو خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہے ۔

سابق صدر آصف زرداری کو جیل میں کیا سہولیات دی جارہی ہیں؟

سابق صدر کو جیل میں فراہم کردہ سہولیات کی تفصیلی رپورٹ عدالتی حکم پر اے ایس پی عدیل نےمقامی عدالت میں  جمع کرائی ہے۔

’آصف زرداری کی زندگی خطرے میں ہے‘

آصف زرداری کو کچھ ہوا تو موجودہ حکومت کیخلاف کارروائی کریں گے اور ان کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے۔

ملک میں عملی طور پر آمریت نافذ کر دی گئی ہے،سیکرٹری جنرل پیپلزپارٹی

کٹھ پتلی حکومت آئینی اور انسانی حقوق پامال کر رہی ہے،نیر بخاری

ٹاپ اسٹوریز