دنیا بھر میں آج غربت کے خاتمے کا عالمی دن منایا جا رہا ہے

پاکستان میں ساڑھے پانچ کروڑ افراد خطِ غربت سے نیچے زندگی بسر کر رہے ہیں، ایشین ڈویلپمنٹ بینک

غربت22سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی

2021تک ساڑھے دس کروڑ افراد انتہائی غربت کا شکار ہوسکتے ہیں، عالمی بینک

دریائے سندھ میں پلنے والی تین نسلیں

ان کیلیے آج بھی روشن رات صرف وہی ہوتی ہے جب چاند اپنے مکمل آب و تاب پر ہو۔ان کی زندگی دریا سے شروع ہو کر دریا پر ہی ختم ہو جاتی ہے

کوروناوائرس: ایشیا میں10کروڑ افراد کی نوکریاں ختم ہونے کا خدشہ

عالمی معیشت کے متاثر ہونے میں 30 فیصد حصہ ایشیا کا ہے اور دنیا کی پیداوار1700 سے 2500 ارب ڈالر تک متاثرہوسکتی ہے

روٹی اور نان کی قیمت بڑھ گئی

نان بائیوں کا کہنا ہے کہ فلور ملز نے آٹے کی قیمت بڑھا دی ہے اور ہم  پرانی قیمت پر نان اور روٹی فروخت نہیں کر سکتے

کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے قیادت کے مدبرانہ فیصلے

ملک کی 55 فیصد آبادی غربت کا شکار ہے جب کہ ایک کروڑ 80 لاکھ افراد کے بیروزگار ہونے کا خدشہ ہے، سرکاری حکام

سال2019:مالی معاملات کی فیصلہ سازی پر آئی ایم ایف کا غلبہ رہا، رپورٹ

پی ٹی آئی نے آئی ایم ایف کے ساتھ قرض کے لیے مایوس کن معاہدہ کیا اور پاکستان پر قرضوں کا بوجھ بڑھا ،انسانی حقوق کمیشن رپورٹ

عالمی ادارہ صحت: پاکستان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈروس نے کہا ہے کہ کورونا پاکستان کے 115 اضلاع میں پھیل چکا ہے۔

پاکستان میں سال 2019 میں مزید 10 کروڑ افراد غریب ہوئے، ماہر معاشیات

ڈاکٹر حفیظ پاشا نے کہا کہ افراط زر کی کمر توڑنے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ پیٹرول کی قیمت کم کر دیں جس کا اثر ہر جگہ پڑے گا۔

غربت کے سبب کراچی میں ایک اور خودکشی

ابراہیم حیدری اور سرجانی یارو گوٹھ میں دو لوگوں نے غربت کی وجہ سے خودکشی کی تھی

ٹاپ اسٹوریز