پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری مسترد

وزیر اعظم عمران خان نے اوگرا کی تجویز منظور نہیں کی، معاون خصوصی شہباز گل

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری مسترد

اوگرا کی جانب سے پٹرول کی قیمت میں 14.07 روپے، ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 13.61 روپے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 7.43 روپے اضافہ تجویز کیا گیا تھا۔

مسلسل چھٹی بار پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کی تیاری

یکم دسمبر سے اب تک پیٹرولیم مصنوعات 16 روپے 37 پیسے مہنگی ہو چکی ہیں

پیٹرول کی قیمت میں 2 روپے 70 پیسے فی لیٹر کا اضافہ

ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2.88 روپے فی لیٹر اضافہ ہوا ہے۔

حکومت کی دو ماہ میں چوتھی بار پیٹرول کی قیمت بڑھانے کی تیاری

گزشتہ ساٹھ دنوں کے دوران پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 13 روپے فی لیٹر سے زائد اضافہ کیا جا چکا ہے۔

پیٹرول کی قیمت میں12روپے فی لیٹر اضافے کا امکان

ڈیزل 10 روپے، مٹی کا تیل 7 اور لائٹ ڈیزل ساڑھے 5 روپے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سفارش

موٹر سائیکل میں پیٹرول ڈلوانےکیلئے ہیلمنٹ پہننے کا عدالتی حکم معطل

اگر کوئی تندور پر بغیر رومال اور ٹوکری کے جائےتو اسے روٹیاں نہیں ملیں گی، عدالت

وزیراعظم کی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کم سے کم اضافے کی ہدایت

اوگرا نے ڈیزل بھی 9روپے57 پیسے فی لیٹر مہنگا کرنے کی سفارش کی ہے

‏یکم دسمبر سے پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کا امکان

‏یکم دسمبر سے پیٹرول 2 روپے 50 پیسے فی لیٹر مہنگا ہوسکتا ہے جب کہ ڈیزل کی قیمت بھی 2 روپے50 پیسے تک بڑھ سکتی ہے۔

حکومت کا پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان

اعلامیے کے مطابق پیٹرول کی قیمت ایک روپے57 پیسے کمی کے بعد 102 روپے 40 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی ہے۔

ٹاپ اسٹوریز