کرتار پور راہداری: افتتاحی تقریب میں من موہن سنگھ اور سدھوکی شرکت

ڈیرہ بابا نانک راہداری کے حوالے سے پہلی بار 1998 میں بھارت اور پاکستان کے درمیان مشاورت کی گئی تھی اور اس کا معاہدہ 24 اکتوبر 2019 کو ہوا

کرتار پور راہداری کا افتتاح کل ہوگا

ڈیرہ بابا نانک راہداری کے حوالے سے پہلی بار 1998 میں بھارت اور پاکستان کے درمیان مشاورت کی گئی تھی اور اب 21 برس بعد 9 نومبر کو کھولے جانے کا امکان ہے

وزیراعظم نے بابا گرونانک یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھ دیا

یہ اپنی نوعیت کی پہلی یونیورسٹی ہوگی جس میں پنجابی اور خالصہ زبانوں پر توجہ مرکوز کی جائے گی۔ وزیرداخلہ

کرتارپور راہداری:پاک بھارت معاہدے پر دستخط ہوگئے

توقع کی جا رہی ہے کہ بھارت کے سابق وزیراعظم من موہن سنگھ بھی سکھوں کے پہلے جتھے کیساتھ پاکستان تشریف لائیں گے

پاکستان میں سکھ مذہب سمیت ہر اقلیت کی عبادت گاہیں محفوظ

پاکستان نے سکھ برادری کا گردوارہ دربار صاحب تک فعال رسائی کا خواب پورا کر دکھایا ہے۔ 2019ء، میں  باباگرونانک کی 550ویں سالگرہ کی تقریبات کے موقع پر کرتارپور راہداری منصوبے کی تکمیل کا سال ہے۔

کرتار پور راہداری پر پاک بھارت مذاکرات کا تیسرا دور مکمل

ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق کچھ معاملات پراتفاق ہوگیاہے ،تاہم دو سے تین نکات پر اتفاق ہونا باقی ہے

کرتارپور راہداری پر 80 فیصد اتفاق ہوگیا، ڈاکٹر فیصل

امید ہے بھارت اس مثبت کام میں تعاون جاری رکھے گا اور اچھے نتائج سامنے آئیں گے ، ڈاکٹر فیصل

پاکستان بھارتی صحافیوں کو ویزے دیگا

پاکستان نے جذبہ خیر سگالی کے تحت کرتارپورراہداری اجلاس کے موقع پر بھارتی صحافیوں کوویزے دینے کااعلان کردیاہے۔ یہ اعلان

کرتارپور راہداری اجلاس، بھارت کا پاکستانی صحافیوں کو ویزا دینے سے انکار

امید ہے کرتار پور میں ہونے والی میٹنگ مثبت ہوگی اور دونوں ملکوں کی عوام کیلئے تبدیلی لائے گی۔ترجمان دفتر خارجہ

ٹاپ اسٹوریز