کالی بھیڑوں کی وجہ سے وکلا بدنام ہوتے ہیں، ماہر قانون بیرسٹر افتخار احمد

سماجی کارکن اور استاد عمار علی جان نے کہا کہ عوام کا اعتماد حکومت سمیت کسی ادارے پر نہیں ہے اور وہ عدم تحفظ کا شکار ہو گئے ہیں۔ اس ملک میں کوئی بھی چیز مقدس نہیں رہی۔

وکلا کو اپنے اوپر لگنے والا دھبہ دھونے میں وقت لگے گا، وزیر صحت پنجاب

ڈاکٹرز انسانیت کی خدمت کرتے ہیں اور اسی احساس پر ڈاکٹروں نے کوئی ہڑتال نہیں کی بلکہ اپنی ذمہ داریاں ادا کرتے رہے۔

عدالتیں طبی بنیادوں پر ضمانت دینے کی پابند ہیں، سابق ڈپٹی نیب پراسیکیوٹر

راجہ عامر عباس نے کہا کہ سپریم کورٹ کئی وجوہات کی وجہ سے نیب پر اعتماد نہیں کرتی اور تحقیقات کے لیے ایک الگ کمیٹی بنا دی جاتی ہے۔

وکلا بارز طرفداری کے بجائے معاملے کی شفاف تحقیقات کروائیں، سابق اٹارنی جنرل

بیرسٹر عابد زبیری نے کہا کہ معاشرے میں کسی بھی قسم کا تشدد درست نہیں ہے۔ معاملے کی پوری تحقیقات سامنے آنی چاہیئیں۔

میڈیکل کالجز پارٹ ٹائم تعلیمی ادارے بن چکے ہیں، ڈاکٹر شیر شاہ سید

سابق سیکرٹری جنرل پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے کہا کہ اچھی حکومت اداروں کو درست کرتی ہے ختم کر کے نئے ادارے نہیں بنائے جاتے۔

پی ٹی آئی کی حکومت سے عوام کی امیدیں دم توڑ رہی ہیں، ایم کیو ایم

ایم کیو ایم رہنما نے کہا کہ مردم شماری کی تحقیقات کرنے کے بعد ہم نے یہ اعلان کیا کہ دھاندلی کی گئی ہے اور ہم نے یہ ثابت کیا ہے۔

ایم کیو ایم کے وزیر کا مطالبے کیلئے پریس کانفرنس کرنا عجیب بات ہے، سعید غنی

پیپلز پارٹی رہنما سعید غنی نے کہا ہے کہ اگر وفاقی حکومت سمجھتی ہے مردم شماری درست ہوئی ہے تو وہ ہمیں مطمئن کرے۔

وزیر اعظم کے ساتھ غلط بیانی کی جا رہی ہے، ماہر معاشیات

ثاقب شیرانی نے کہا کہ وزارت خزانہ اور اسٹیٹ بینک پاکستان ایک پیچ پر نہیں ہیں اور یہ ہو بھی نہیں سکتے۔

چیئرمین ایف بی آر کا محصولات کے سالانہ ہدف پر نظرثانی کا اعتراف

شبر زیدی نے کہا کہ ہم نے معاشی سطح پر ایسے اقدامات اٹھائے ہیں جو پاکستان کی 40 سے 50 سالہ تاریخ میں نہیں اٹھائے گئے ہوں گے۔

نیب کو منہ چھپانے کیلئے بھی جگہ نہیں ملنی تھی، عظمیٰ بخاری

سابق چیئرمین سینیٹ فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ اگر عدالت نے اجازت دی تو آصف علی زرداری کراچی میں اپنا علاج کرانے کو ترجیح دیں گے۔

ٹاپ اسٹوریز