آئی ایم ایف کا وفد مذاکرات کے لئے پاکستان پہنچ گیا

پاکستان اور آئی ایم ایف کی تکنیکی ٹیم کے درمیان مذاکرات 2 ہفتے تک جاری رہیں گے۔

پنجاب: گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں 44 فیصد اضافی ٹیکس جمع کیا گیا

رواں مالی سال کے ابتدائی تین ماہ کے دوران گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں 77 ارب روپے اضافی ٹیکس وصول کیا گیا

‘پاکستان کا بیانیہ کمزور نہیں، جیب خالی ہے’

آئی ایم ایف کے محتاج ہوں گے تو دنیا توجہ نہیں دی گی،وزیرخارجہ

آئی ایم ایف کا اعلیٰ سطح کا وفد آج پاکستان پہنچے گا

وفد کی وزیر اعظم عمران خان، مشیر خزانہ عبد الحفیظ شیخ کے علاوہ دیگر وفاقی و صوبائی حکام سے بھی ملاقاتیں متوقع ہیں۔

آئی ایم ایف پروگرام پورا نہ ہو سکا تو کیا ہوگا؟

اگر حکومت ناکام ہوئی تو برآمدات میں 23 فیصد کمی لانا پڑے گی اور شرح نمو تو بالکل ہی رک جائے گی، ماہر معاشیات 

 ‘آئندہ معاشی سال ملکی معیشت کی بحالی کا سال ہوگا’

 جب حکومت سنبھالی تو ملک پر قرضہ 31 ہزار ارب  روپے تھا جبکہ سر کلرڈیٹ 38 ارب روپے تھا، حفیظ شیخ

آئی ایم ایف کے پاس جانا مجبوری ہے، شیخ رشید

شیخ رشید احمد نے کہا کہ آٹا، گیس، چینی مہنگی ہونے کی وجہ سابق حکمران ہیں۔

پاکستان نے چین سے کتنا قرضہ لیا؟ تفصیلات سامنے آ گئیں

پاکستان نے موجوہ مالی سال میں صرف چین سے 6 ارب 50 کروڑ ڈالر قرضے وصول کیے۔

آئی ایم ایف سے معاہدوں کے بعد 5 سال میں نتائج ملیں گے، فواد

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے چاند دیکھنے کے لیے ایپلیکیشن تیار کرنے کا اعلان کر دیا۔

فوری آئی ایم ایف کے پاس نہ جانا ہماری غلطی تھی،ہمایوں اختر

معاشی مشکلات کو موجودہ حکومت نے پیدا نہیں کیا لیکن ان پر ان مشکلات کو سنبھالنے کی ذمہ داری ضرورعائد ہوتی ہے،خرم حسین 

ٹاپ اسٹوریز