پی آئی سی پر وکلا کا حملہ: میڈیکل کالج کی طالبات بھی نشانہ بنیں

پی آئی سی پر وکلا کا حملہ: میڈیکل کالج کی طالبات بھی نشانہ بنیں

لاہور: پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) پر حملے کے دوران وکلا کا نشانہ میڈیکل کالج کی طالبات بھی بنی تھیں۔ اس کا انکشاف منظر عام پر آنے والی ایک نئی ویڈیو کے ذریعے ہوا ہے۔

سانحہ پی آئی سی پر سینئر وکلاء نے معافی مانگ لی

وکلا کی جانب سے جب پی آئی سی پر حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں وہاں توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی ہوئی تھی تو اس کے نرغے میں میڈیکل کالج کی طالبات کو لے کر جانے والی بس بھی آگئی تھی۔

ہم نیوز کے مطابق موصول ہونے والی ویڈیو میں باآسانی دیکھا جا سکتا ہے کہ وکلا کے ایک گروپ نے میڈیکل کالج کی طالبات کو ایک طریقے سے یرغمال بنایا ہوا ہے۔

ویڈیو میں واضح طور پر نظر آرہا ہے کہ پہلے وکلا نے بس کو روکا اور اس کے بعد بس ڈرائیور سے نازیبا الفاظ کا تبادلہ کیا۔

پی آئی سی میں ہونے والی ہنگامہ آرائی: عمران خان کا بھانجا بھی ملوث نکلا

وکلا کی جانب سے طالبات کو ہراساں کرنے کی شکایت ملی ہے۔ ہم نیوز کو اس ضمن میں بتایا گیا ہے کہ دھمکیاں دینے اور بس کے شیشوں پر ہاتھ مارتے رہنے کا بھی واقعہ ہوا ہے۔

 

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز