وزیراعظم نے ہرجانہ کیس کے فیصلے کیخلاف اپیل دائر کردی

بھارتی آرمی چیف اشتعال انگیزی کر رہے ہیں، عمران خان

فوٹو: فائل

پشاور: وزیراعظم عمران خان کے جانب سے ہرجانہ کیس میں پشاور ڈسٹرکٹ جج کے فیصلے کے خلاف پشاور ہائی کورٹ میں اپیل دائر کردی گئی ہے۔

اپیل میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ وزیراعظم نے بطور پارٹی چئیرمین پریس کانفرنس میں سینیٹ انتخابات کے لیے ووٹ بیچنے والے اراکین کے نام لیے تھے۔

اپیل میں واضح کیا گیا ہے کہ ہارس ٹریڈنگ کے الزامات سامنے آنے پر پارٹی کی ڈسپلن کمیٹی کو ٹاسک دیا گیا تھا جن کی جانب سے نام سامنے آنے پر کارروائی کے لیے عمران خان نے پریس کانفرنس میں صرف اعلان کیا۔

تاہم ماتحت عدالت نے وزیراعظم کی جانب سے کیس خارج کرنے کی درخواست مسترد کردی ہے لہٰذا عدالت ماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دے۔

خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے 2018 میں ایک پریس کانفرنس کے دوران سینیٹ انتخابات میں ووٹ فروخت کرنے والے 20 ارکان کو اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

انہوں نے ووٹ فروخت کرنے والوں کے نام بھی لیے تھے جن میں ایک نام فوزیہ بی بی کا تھا۔ بعد ازاں خاتون رکن اسمبلی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے اس الزام کو مسترد کرتے ہوئے عدالت میں ہرجانے کا دعویٰ دائر کر دیا تھا۔

پی ٹی آئی کی سابق ممبر صوبائی اسمبلی فوزیہ بی بی نے عمران خان کے خلاف 50 کروڑ روپے ہرجانہ کا کیس دائر کیا ہے۔

متعلقہ خبریں

ٹاپ اسٹوریز